قرآن مکنون: سورة الاحزاب، الواقعہ اور العصر کی باطنی تشریح

اصل قرآن سینہ مصطفی میں موجزن ہے اس تک رسائی کیلئے تذکیہ نفس اور تصفیہ قلب بہت ضروری ہے ۔زندگی اتنی تیزی سے گزرتی ہے کہ پتہ نہیں چلتا اس لئے جوانی کی عمر میں ہی تصفیہ قلب ہونا پیغمبروں کا شیوہ ہے۔

توصّل یا وسیلہ کیا ہوتا ہے؟

توصّل اللہ اور بندے کے درمیان پُل کی مانند ہوتا ہے۔ اللہ کے مشرق پر سات وسیلے موجود ہیں جس کے ذریعے عام انسان جڑتا ہے لیکن اللہ کے مغرب پر امام مہدی گوھر شاہی کا واحد وسیلہ ہے یہی وجہ ہے کہ آپکا [...]

قرآن ِمکنون: سورة الاعراف (اللہ اور ابلیس کے بیچ مکالمہ )

سورة الاعراف میں اللہ اور شیطان کے درمیان مکالمہ ہے جس سے ہمیں یہ پتہ چلتا ہے کہ قلب کے ذریعے انسان کا رابطہ اللہ سے جڑ تا ہےاور یہی صراط مستقیم ہے لیکن اس راستے پر شیطان بیٹھا ہے جس کو ہٹانے [...]

قرآنِ مکنون: سورة الاعراف ( نبی پاک ﷺ بحثیت ِمجدد اعظم)

سورة الاعراف میں اللہ تعالی نے فرمایا ہے کہ ہم نے محمد الرسول اللہ کو پور ی انسانیت کیلئے مبعوث کیا ہے اور آپکی حیثیت مجدد اعظم کی طرح ہے تاکہ باقی ادیان بھی حضوؐرسے رشتہ جوڑ یں کیونکہ آپ انکو [...]