امام مہدی کی نشانی سے متعلقہ امام جعفر صادق کا قول یا حدیث

امام جعفرصادق کا قول ہے کہ امام مہدیؑ کاچہرہ چاند پرطلوع ہوگا، درحقیقت یہ قول نہیں بلکہ حدیث نبوی ہے کیونکہ امام ابو حنیفہ نے امام جعفر صادق کو یہ حدیث سنائی تھی ۔ فرقہ پسند عناصر کی احادیث میں ردوبدل کی وجہ سے آج امت محمد حدیث کوامام جعفرکا قول قرار دیتی ہے۔

کیا احادیث پہچان مہدی میں معاون ہیں؟

امام مہدیؑ کوپہچاننے کیلئے ہمیں نفس کوپاک کرنا ہوگا اوردل میں اللہ کا نورلانا پڑے گا۔ جب دل اللہ کے نورسے منورہوجائے گا توہم امام مہدیؑ کوپہچان لیں گے۔ آج امام مہدی سرکار گوھرشاہی لوگوں کےدل اللہ کےنورسےزندہ کررہےہیں۔

علمِ غیب پرایمان لانا کیا ہے؟

علمِ غیب یعنی نظروں سے غائب علم یہ باطنی تعلیمات اورلطائف کی طرف اشارہ ہےتاکہ ہم اپنی ان مخلوقوں کو اللہ کے نور سے منور کر کے نسبت الہیہ حاصل کر سکیں۔سیدنا گوھر شاہی اس دور فتن میں وہی باطنی تعلیمات عطا فرما رہے ہیں۔

قرآن میں رب المشرقین ورب المغربین کا باطنی راز

اللہ مشرقین اورمغربین کا رب ہے لیکن جو ہستیاں مغربین میں ہیں اُن کا اللہ سے بلاواسطے کاتعلق ہے۔ امام مہدیؑ مغربین میں سے ہونگے جن کی تعلیم عشق ہوگی اورجوبھی سیدنا امام مہدیؑ کی بارگاہ اقدس میں آگیا وہ نعمتوں سے مالامال ہوگیا۔

سیدی یونس الگوھر کی جانب سے صوفی کورس کی شروعات

عزت مآب سیدی یونس الگوھر نے ایلیمنٹری صوفی کورس کی شروعات کی ہے تاکہ لوگ تصوف کی حقیقی تعلیم سے آراستہ ہو سکیں اور جان سکیں کہ تصوف شرک و بدعت نہیں بلکہ تصوف سنت مصطفی ، روح قرآن اور روح اسلام ہے لیکن اسکے لئےہاتھوں میں علم کا پرچم بہت ضروری ہے تاکہ تصوف کا دفاع کر سکیں۔

اہم اعلانیہ: مہدی فاوٗنڈیشن کینیڈا میں کچھ تبدیلیاں

چند ناگہانی وجوہات کی وجہ سے مہدی فاوٗنڈیشن انٹرنیشنل سے عمران پاشا، عمران سید اور اشفاق احمد کو خارج کیا جاتا ہے اور اُن کے مرتبہ شیخ کو بھی منسوخ کیا جاتا ہے۔ مزید معلومات کے لیے اپنے علاقے کے صدر سے رابطہ کریں۔

رب کی خوشنودی یا ناراضگی کا کیسے پتہ چلتا ہے؟

جب اللہ تعالی بندے سے راضی ہوتا ہے تو بندے کے دل میں اپنا نام جاگزیں کردیتا ہے اوراللہ اُس بندے سے ناراض ہوتا ہے جس کی روح کو اللہ نے اپنے غضب سے بنایا۔ اس دورِآخر میں امام مہدی گوھر شاہی لوگوں کے دل اللہ کے نام سے زندہ کررہے ہیں۔

لطائف کے ذکر کا طریقہ

لطیفہ قلب کے جاری ہونے کے بعد اگر باقی لطائف کے مقامات پر بھی دھڑکن محسوس ہونا شروع ہو گئی ہے تو اسکے لئے لطائف کی محفل کا کرنا ضروری ہے جسکا طریقہ ہماری اس پوسٹ میں باآسانی دیکھا جا سکتا ہے

سورة الضحی کی باطنی تشریح

حضوؐرپر تین سال تک وحی و الہام کا سلسلہ اللہ کی طرف سے منقطع ہو گیا اور پھر آیت الضحی نازل ہوئی کہ جس میں مستقبل اور ماضی کا تذکرہ فرمایا اور نوید دی کہ آپ کا دوسرا دور پہلےدور سے افضل ہو گا۔