بین وہابی ازم (Ban Wahhabism) کی تحریک چلانے کی وجوہات:

فرقہ وہابیہ اسلامی دہشت گردی میں ریڑھ کی ہڈی کی حیثیت رکھتا ہے جس کو سعودی عرب کی پشت پناہی حاصل ہے۔فردِ واحد اورنوجوان نسل میں شدت پسندی کا ذمہ دار یہی وہابی نظریہ ہے۔وہابی نظریہ نفرت آمیز تقریر(Hate Preaching) کی ایک شکل ہے جس سے تمام انسانیت کو خطرہ لاحق ہے۔
ISIS اور دیگر دہشت گرد تنظیمیں روز بروز مضبوط ہو رہی ہیں کیونکہ ان کے حامی مغربی ممالک سمیت پوری دنیا میں بہت تیزی سے بڑھ رہے ہیں۔ سعودی عرب سے جو بھی تیل نکل رہا ہے انہوں نے اس کو دہشت گردوں کی تربیت اور ہاتھ مضبوط کرنے میں استعمال کر رہے ہیں۔وہابیوں نے سعودی عرب کے ساتھ مل کر اپنی زہر آلود تعلیم اور نظریے کو پھیلانے کیلئے بے پناہ پیسہ خرچ کیا ہے۔ ان کا طریقہ کار یہ ہے کہ یہ دیکھتے ہیں لوگوں کا رجحان کیا ہے ، کس کی کیا کمزوری ہے ، مسجد کا کیا حال ہے ۔ انہوں نے اپنے عام لوگوں کی مدد سے مسجد کے کام کروا دئیے ، مولوی کے بیٹے کی مدد کر دی ، جاب دلوادی ، قرآن چھپوا کر مفت بٹوا دئیے ۔اس طرح جب حالات ان کے مطابق ہو گئے تو لوگوں کے ذہنوں میں اپنے نظریے کا اسلام اتارا۔ اس طرح دنیا بھر کے ممالک میں وہابی مکتبہ فکر کے مدارس قائم کر کے اپنے نظام کی داغ بیل ڈال رہے ہیں۔ وہابی مساجد تمام دنیا میں دہشت گرد پیدا کرنے کی فیکٹریاں ہیں۔ ملکوں کے اندر جو دہشت گرد (Homegrown Terrorism)پیدا ہو رہے ہیں اس کی ذمہ دار یہی وہابیت کی زہر آلود تعلیم ہے۔
سیریا (Syria) پر ہوائی حملے کرنے سے اس دہشت گردی کا خاتمہ نہیں کیا جا سکتا۔ اندرون ملک دہشت گردی ختم کرنے اور امن قائم کرنے کیلئے فرقہ وہابیہ اور اس کی زہر آلود تعلیم پر پابندی لگانا بہت ضروری ہے ۔اسی خطرے کے پیشِ نظر مہدی فاؤنڈیشن انٹرنیشنل نے چند بڑ ے ممالک میں جن میں امریکہ ، برطانیہ اور انڈیا شامل ہے میں (Ban Wahhabism) بین وہابی ازم کی تحریک شروع کی ۔اور ایک آن لائن (Petition) عرضی شروع کی جس کا مقصد لوگوں میں اس وہابیت کی ذہر آلود تعلیم سے لاحق خطرات کو اُجاگر کرنا تھا۔اسی ضمن میں چلائی گئی تحریک کی تصویریں اور تاثراتی ویڈیوز آپ ملاحظہ کر سکتے ہیں۔اس عرضی (Petition) کا مقصد ملکوں کی حکومتوں سے تقاضا تھا کہ اگر وہ دہشت گردی ختم کرنے میں مخلص ہیں تو ما لک الملک امام مہدی گوھر شاہی کے نمائندہ سیدی یونس الگوھر کی جانب سے نشاندہی کی گئی اس زہر آلود تعلیم پر پابندی لگائیں۔تاکہ اندرونِ ملک ہو رہی دہشت گردی سے نجات پائی جا سکے۔
07-January-2016-Ban Wahhabism Campaign at The White House-Washington, D.C